Voice of Asia News

منشیات برآمد گی کیس ،رانا ثنااﷲ کے جوڈیشل ریمانڈ میں 9 روز کی توسیع

لاہور(وائس آف ایشیا) لاہور کی انسداد منشیات عدالت نے منشیات برآمدگی کیس میں رانا ثنااﷲ کے جوڈیشل ریمانڈ میں نو روز کی توسیع کردی۔ عدالت نے اے این ایف کی جانب سے رانا ثنااﷲ پر فرد جرم عائد کرنے کی درخواست پرنوٹس جاری کردیئے۔ بدھ کو منشیات برآمدگی کیس میں گرفتار ملزم رانا ثنااﷲ کو سات روزہ جوڈیشل ریمانڈ کے بعد انسداد منشیات عدالت کے ڈیوٹی جج خالد بشیر کی عدالت میں پیش کیا گیا۔ رانا ثنااﷲ کے وکیل اعظم نذیر تارڑ نے موقف اختیار کیا کہ فوٹیجز محفوظ کر لی گئی ہیں۔ فوٹیجز ضائع ہونے کا اندیشہ ختم ہو گیا ہے۔ اے این ایف کی جانب سے بنائی گئی تمام سٹوری جھوٹی ہے۔ سی سی ٹی وی فوٹیجز ہمارے موقف کو درست ثابت کرتی ہیں۔ اے این ایف پراسیکیوٹر نے موقف اختیار کیا کہ اس ریکارڈ کو عدالت میں پیش کیا جائے۔ یہ باہر جاتے ہیں تو کہتے ہیں کہ ان کے ساتھ زیادتی ہو رہی ہے۔ اگر ڈیوٹی جج ٹرائل سن سکتا ہے تو پھر ملزمان پر فرد جرم عائد کر دی جائے۔ عدالت نے فریقین کے دلائل کے بعد رانا ثنااﷲ کے جوڈیشل ریمانڈ میں اٹھارہ اکتوبر تک توسیع کردی۔ ڈیوٹی جج نے رانا ثنااﷲ پر فرد جرم عائد کرنے کی درخواست پر نوٹس جاری کردئیے۔
وائس آف ایشیا9اکتوبر2019 خبر نمبر13

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •