Voice of Asia News

حکومت کا چھ اہم قوانین صدارتی آرڈیننس کے ذریعے نافذ کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد(وائس آف ایشیا) حکومت نے پارلیمنٹ میں قانون سازی کیلئے مشکلات پر چھ اہم قوانین صدارتی آرڈیننس کے ذریعے نافذ کرنے کا فیصلہ کرلیا، احتساب آرڈیننس میں ترامیم بھی شامل ہیں، احتساب میں گرفتارملزم کی ضمانت کا اختیار احتساب عدالت دینے کی تجویز بھی ہے مزید ترامیم پلی بارگیننگ، بزنس احتساب کے معاملات میں عدالتی اختیارات میں مزید اضافے اور دیگر معاملات سے متعلق ہیں، بے نامی جائیدادوں میں ملوث افراد کو گرفت میں لانے کا بل بھی شامل ہے۔رپورٹ کے مطابق پارلیمنٹ میں حکومت اپوزیشن کے درمیان قانون سازی کے معاملات پر ہم آہنگی نہ ہونے پر حکومت نے اہم قانونی معاملات عوامی حقوق، خواتین کے تحفظ، انصاف کی فراہمی، احتساب، بے نامی جائیدادوں سے متعلق بلز صدارتی آرڈیننس کے ذریعے لاگو کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ وزارت قانون و انصاف نے سمری تیار کرلی ہے۔ چھ بلز اس سمری کے ساتھ منسلک کیے گئے ہیں اور بتایا گیا ہے کہ اہم بلز قائمہ کمیٹیوں میں زیر التواء ہوکر رہ گئے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق ان بلز میں احتساب آرڈیننس میں ترامیم ، بے نامی جائیدادوں کے ذمہ داران کو جوابدہ بنانے کا قانون، وراثتی سرٹیفکیٹ کے آسان اجراء ، خواتین کے حقوق، لیگل ایڈ اینڈ جسٹس اتھارٹی بارے نئی قانون سازی سے متعلق ایک بار پھر پارلیمنٹ کے بائی پاس ہونے کا خدشہ ہے، حکومت نے 6 نئے قوانین سے متعلق صدارتی آرڈیننس لانے کا فیصلہ کیا ہے۔پیر کو کابنیہ میں وازارت کی سمری منظوری کے لئے پیش کیا جائے گی۔ وزارت قانون نے وراثت کا سرٹیفکیٹ بل 2019، خواتین کے وراثت میں حقوق کا بل 2019 ، سمری لیگل ایڈ اینڈ جسٹس اتھارٹی ایکٹ 2019 ، سپیریئر کورٹس آرڈر بل 2019 بے نامی ٹرانزیکشن ترمیم بل 2019 اورنیب ترمیمی بل 2019 آرڈیننس کے ذریعے نافذ کرنے فیصلہ کیا گیا ہے۔ سفارشات قانونی اصلاحات کے حوالے سے ٹاسک فورس تیارکی ہیں۔سمری پیر کو وفاقی کابینہ اجلاس میں پیش کی جائے گی، مستحق نادار اور غریب لوگوں کیلئے لیگل ایڈ اتھارٹی بنائی جائیگی۔ وراثت کا سرٹیفکیٹ 15 روز میں جاری کرنے سے متعلق بل بھی آرڈیننس کے ذریعے لایا جائے گا، خواتین کو حقوق کی ادائیگی کیلئے 2 ماہ کے اندر سہولتیں دی جائیں گی، نیب کے پلی بار گین،بزنس عدالتی اختیارات میں اضافے کے لئے ترامیم کی ج ارہی ہیں، سپریم کورٹ اور ہائیکورٹس میں وکلا کے لباس اور کنڈکٹ سے متعلق قانون میں بھی ترمیم لائی جائے گی۔
وائس آف ایشیا12اکتوبر2019 خبر نمبر126

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •