Voice of Asia News

دبئی کی ریاست فجیرہ میں بچے کو تھپڑ مارنے پر لاکھوں روپے جرمانہ

فجیرہ(وائس آف ایشیا)متحدہ عرب امارات کی ریاست فجیرہ کی مقامی عدالت نے بچے کو تھپڑ مارنے کے جرم میں خلیجی شخص کو لاکھوں روپے جرمانہ ادا کرنے کا حکم دے دیا۔میڈیارپورٹس کے مطابق عدالت نے بچے کو تھپڑ رسید کرنے کے جرم میں ایک ماہ معطل قید کی سزا بھی سنائی ہے۔مجرم نے عدالت کو بتایا کہ جب وہ ایک شاپنگ مال کے بیت الخلامیں رفع حاجت میں مصروف تھا کہ اس دوران دروازے پر زور زور سے دستک دی گئی جس پر اسے شرمندگی محسوس ہورہی تھی اور شدید غصہ آرہا تھا۔مجرم کا کہنا تھا کہ جیسے ہی وہ بیت الخلا سے باہر آیا تو بچہ زور زور سے ہنسنے لگا، دراصل وہ اپنے دستوں کے ساتھ مل کر مزاق کررہا تھا جس پر وہ آگ بگولہ ہوگیا اور بچے کو سبق سکھانے کے لیے ہلکا سا تھپڑ مارا۔عدالت نے جرم ثابت ہونے پر خلیجی شخص کو ایک ماہ معطل قید کی سزا اور 20 ہزار درہم یعنی قریباً ساڑھے آٹھ لاکھ روپے پاکستانی جرمانے کی سزا سنا دی۔
وائس آف ایشیا30اکتوبر2019 خبر نمبر67

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •