Voice of Asia News

منیجنگ ڈائریکٹر ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا جنید خان کی ’’وائس آف ایشیا‘‘ سے گفتگو::محمد شاہ دوتانی

 
منیجنگ ڈائریکٹر ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا جنید خان نے کہا ہے کہ خیبرپختونخوا کو قدرت نے حسین ترین سیاحتی مقامات سے نوازا ہے تاہم ان مقامات کی دُنیا بھرمیں رونمائی کی ضرورت ہے تاکہ سیاح دیگر ملکوں کا دورہ کرنے کے علاوہ پاکستان اور خصوصاً خیبرپختونخوا کے سیاحتی مقامات کا بھی رخ کریں،سیاحت کا شعبہ کسی بھی ملک کی معیشت کو مضبوط بنانے میں اہم رول ادا کرتا ہے اور ہماری کوشش ہے کہ سیاحت کے ذریعے ملکی اور صوبہ خیبرپختونخوا کی معیشت کو مستحکم کیا جائے، وزیراعظم عمران خان کے وژن کے مطابق پاکستان کی سیاحت کودُنیا بھر میں ایک برانڈ کے طور پر متعار ف کرانے کیلئے ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا صوبے میں مختلف پراجیکٹس لگا رہی ہے،صوبے میں بدھ مت کی تہذیب ،مذہبی سیاحت سمیت سیاحتی مقامات کی آباد کاری اورایڈونچر کے فروغ کیلئے مختلف سرگرمیوں کا انعقاد کرنے کے علاوہ ثقافتی سرگرمیوں اور سپورٹس ایونٹس منعقد کرکے بڑی تعداد میں مقامی اور غیر ملکی سیاحوں کوصوبہ خیبرپختونخوا کی جانب راغب کیا گیا ہے جو صوبے کی معیشت مضبوط بنانے کی جانب اہم قدم ہے،اس کے علاوہ غیر ملکی وی لاگرز، یوٹیوبر اور سوشل میڈیا ماہرین نے بھی صوبے کا رخ کیا،صوبائی حکومت اورٹورازم کارپوریشن نئے سیاحتی مقامات بھی آباد کررہی ہے تاکہ ملکی و غیر ملکی سیاح اب ان نئے مقامات کی جانب بھی راغب ہوں ان کی اس جانب راغب ہونے سے صوبہ کے عام لوگ بھی مستفید ہوں گے۔ان خیالات کااظہار انہوں نے ’’وائس آف ایشیا‘‘ کو خصوصی انٹرویودیتے ہوئے کیا۔منیجنگ ڈائریکٹر ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا جنید خان نے کہا کہ ٹورازم کارپوریشن نے سیاحت کو فروغ دینے کیلئے ملکی تاریخ کی پہلی ٹورازم موبائل ایپ بنائی ہے اس موبائل ایپ کے ذریعے سیاح اب گھر بیٹھے سیر و تفریح کیلئے اپنے پلان ترتیب دے سکیں گے، اس موبائل ایپ سے سیاحوں کو صرف ایک کلک پر صوبے بھر کے سیاحتی، تاریخی مقامات، جھیلیں، وادیاں، آبشاریں، سیاحتی مقامات پر موجود ہوٹلز کی بکنگ، ریسٹورنٹس، سیاحتی مقامات میں موسم کی صورتحال، ایمرجنسی کی صورت میں متعلقہ اداروں کے رابطہ نمبر، ٹورپیکیجز، سیاحتی مقامات کی رابطہ سڑکیں، پیڑول پمپس، طبی سہولیات اور دیگر بہت کچھ باآسانی تفصیلی معلومات میسر ہو سکے گی، موبائل ایپ کے ذریعے اب شہری کسی بھی نئے سیاحتی مقام کی نشاندہی کرکے محکمہ سیاحت کی اس ایپ پر اپ لوڈ کر سکتے ہیں، اس کے علاوہ سیاح موبائل ایپ کے ذریعے سیاحتی مقامات سے متعلق اپنی رائے بھی دے سکیں گے، موبائل ایپ کے ذریعے سیاح سوشل میڈیا کے ذریعے ایک دوسرے سے رابطے میں رہنے سمیت تجربات سے بھی استفادہ کرسکتے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں منیجنگ ڈائریکٹر ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا جنید خان نے بتایا کہ ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا نے صوبے کی ڈسٹرکٹ پر مبنی ڈاکومنڑی سیریز بنائی ہے جس میں ڈسٹرکٹ پشاورکی ڈاکومنٹری میں شہر کے تاریخی مقامات کے علاوہ شہر کی ثقافت، تاریخ، کھیل، روایتی کھانوں اور مختلف پہلوؤں سے اس کو پیش کیا گیا ہے، اس سفر نامہ میں صوبائی ثقافت کے ساتھ ساتھ موسیقی میں سرندہ، رباب، ستار،الیکٹریک گٹار،ڈرم،گنگرو،میکسی کن گٹار،کک ڈرم،کرک ڈھول، پیانو سمیت مختلف موسیقی اشیاء کو زیر استعمال لایا گیا، جبکہ اس کے علاوہ دیگر ڈسٹرکٹ پر بھی ڈاکومنٹریز پر کام جاری ہے، سیاحت صوبے کی معیشت اوریہاں کی عوام کو مناسب طریقے سے ترقی کی جانب گامزن کرنے کیلئے ایک ڈرائیور کی حیثیت سے کام کرسکتی ہے، ٹورازم ڈیپارٹمنٹ اسی طرح مختلف کمپنیز کے ساتھ پارٹنرشپ کرکے سیاحوں کو سہولیات کی فراہم میں مددگار ثابت ہو تی رہے گی، 20 سے زائد سیاحتی مقامات کے ساتھ نئے مربوط ٹورازم زونز قائم کئے جا رہے ہیں جواب تک صوبے میں شناخت شدہ سیاحتی زون میں تبدیل ہو جائیں گے، ان سیاحتی علاقوں کو نئے ضم ہونے والے قبائلی اضلاع تک توسیع دی جارہی ہے تاکہ روزگار کے مواقع پیدا ہوں اورسیاحتی زونز میں تمام سہولیات میسر ہوں گی جن میں بین الاقوامی معیار کے ہوٹلز، گرین بیلٹ، کھیلوں کے میدان، جیپ ٹریک اور دیگر سہولیات شامل ہیں، ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا نے سیاحوں کی سہولت کیلئے سیاحتی بسیں، ٹورازم ڈاکومنٹری فلم کاآغاز، صوبے کے قدرتی مناظر اور مقامات کا دورہ کرنے کیلئے بین الاقوامی وی لاگرز اور یوٹیوبر کو راغب کیا جبکہ ساتھ ہی سیاحوں کی سہولت کیلئے گبین جبہ میں کیمپنگ پاڈز بھی لگائے۔
ایک سوال کے جواب میں منیجنگ ڈائریکٹر ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا جنید خان نے کہا کہ بین الاقوامی سیاحوں کو ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا کی جانب سے سالانہ کلینڈر میں شامل بین الاقوامی سطح کے مشہور ایونٹس جن میں شندور پولو فیسٹیول، کالاش فیسٹیول اور دیگر کے بارے میں معلومات فراہم کی جارہی ہیں جبکہ ساتھ ہی ناران، کاغان،نتھیاگلی اور دیگر سیاحتی مقامات سمیت صوبہ میں بین الاقوامی سیاحوں کیلئے صوبائی حکومت اورٹورازم کارپوریشن کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات سے بھی آگاہ کیا جا رہا ہے ،ورلڈ بینک کے تعاون سے سیاحوں کو صوبے کے سیاحتی مقامات کی سیر وتفریح سے آراستہ کرنے کیلئے بسیں بھی چلائی گئیں ہیں جبکہ ساتھ ہی صوبے کے سیاحتی مقامات، جھیلیں، خوبصورت وادیوں،ملاکنڈ ڈویڑن، ہزارہ ڈویڑن اور صوبے کی دیگر علاقائی و تاریخی ثقافت پربنائی گئی ڈاکومنٹری بھی غیر ملکی سیاحوں کو دکھائی جا رہی ہے۔جبکہ صوبائی حکومت اورٹورازم کارپوریشن نئے سیاحتی مقامات بھی آباد کررہی ہے تاکہ ملکی و غیر ملکی سیاح اب ان نئے مقامات کی جانب بھی راغب ہوں ان کی اس جانب راغب ہونے سے صوبہ کے عام لوگ بھی مستفید ہوں گے۔
ایک سوال کے جواب میں منیجنگ ڈائریکٹر ٹورازم کارپوریشن جنید خان نے کہا کہ خیبرپختونخوا حکومت صوبے کی 65 فیصد نوجوان آبادی کو ملک کا مفید ترین شہری بنانے کیلئے متحرک اور پرعزم ہے، صوبے میں بین الاصوبائی گیمز اور انڈر 23 گیمز کی انعقاد کراکے ہم نے صوبے کے نوجوان نسل کو کھیلوں کی سرگرمیوں میں حصہ لینے کیلئے بھرپور مواقع فراہم کیے جس سے نیا ٹیلنٹ سامنے آیا اور ان کھلاڑیوں کے ٹیلنٹ کو نکھارنے کا فائدہ خیبرپختونخوا کو نیشنل گیمز میں چاروں صوبوں میں پہلی پوزیشن حاصل کرنے کی صورت میں ملا ہے۔ پشاور میں 9سال بعد کامیاب نیشنل گیمز کی انعقاد پر مسرت کا اظہار کرتے ہو ئے منیجنگ ڈائریکٹر ٹورازم کارپوریشن جنید خان نے کہا کہ نیشنل گیمز کے کامیاب انعقادپر وزیراعلیٰ محمود خان، سینئر صوبائی وزیر عاطف خان ،ڈی جی کھیل اسفندیار خٹک،پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن، خیبرپختونخوا اولمپک ایسوسی ایشن، ڈائریکٹریٹ آف سپورٹس کے آفیسرمبارک باد کے مستحق ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت صوبے میں کھیلوں کے ساتھ سیاحت کے فروغ کیلئے بھی اہم اقدامات اٹھارہی ہیں، اس میں کوئی شک نہیں کہ ہمارے نوجوان بے پناہ صلاحیتوں، ذہانت اور جذبے سے مالامال ہیں اور انہیں دنیا بھر میں جہاں بھی موقع ملتا ہے وہ اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے اپنی ذہانت کا لوہا منواتے ہیں اور پاکستان کیلئے فخر اور نیک نامی کا باعث بنتے ہیں،ہمارے کھلاڑی پوری دنیا میں پاکستان کی پہچان اور شناخت ہیں،نوجوانوں کی حوصلہ افزائی اور سرپرستی کیلئے حکومت بھرپور اقدامات کررہی ہیں، ہم نے گزشتہ چند سالوں میں صوبے بھر میں انڈر23گیمز سمیت کئی دیگر کھیلوں کے مقابلوں کا انعقاد کرکے تسلسل سے پورے صوبے میں نوجوان کھلاڑیوں اور طالب علموں کو نئی پہچان اور شناخت دی ہے۔ خصوصا ًانڈر23 گیمز نے پورے صوبے میں نوجوان کھلاڑیوں کو پوری دنیا کی توجہ پاکستان کی طرف مبذول کرا دی، اور صوبے کے ہر شہر میں کھیلوں، کھلاڑیوں اور کھیل کے میدانوں کو ازسر نو منظم کیاگیا، عالمی سطح پر کھیلوں کی سرپرستی اور نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کیلئے کھلاڑیوں کو کیش پرائز سے نوازا ہے، انہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت صوبے میں کھیلوں کے فروغ میں انتہائی سنجیدگی کیساتھ کام کر رہی ہے۔ انشاء اﷲ مستقبل میں اس کے اچھے نتائج سامنے آئیں گے نوجوانوں کو صحت مند سرگرمیوں کی طرف مصروف رکھنا سب سے زیادہ اہم ہے کھیلوں کے میدان آباد کرکے ہم نئی نسل کو زیادہ بہتر اور صحت مند پاکستان دے سکتے ہیں،یہی وجہ ہے کہ خیبر پختونخوا میں مختلف کھیلوں کے انعقاد کوجاری رکھتے ہوئے صوبائی حکومت مزید میگا ایونٹس منعقد کرائیں گے۔

 

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •