Voice of Asia News

ہمارے زیادہ تر ڈرامے حقائق کی بجائے مصنوعی کہانیوں پر ہیں ‘ حسینہ معین

لاہور( وائس آف ایشیا)معروف ڈرامہ رائٹر حسینہ معین نے کہا ہے کہ اب ہمارے زیادہ تر ڈرامے حقائق کی بجائے مصنوعی کہانیوں پر مشتمل ہوتے ہیں جبکہ عام گھرانوں کی کہانیاں بالکل نظر انداز کر دی گئی ہیں ۔ ایک انٹر ویو میں حسینہ معین نے کہا کہ میرے ذاتی خیال میں آج کل جو ڈرامہ بن رہا ہے ا س سے ایسا لگتا ہے کہ ہم کسی دوسرے ملک سے متاثر ہیں او راس میں اس کی جھلک نظر آتی ہے ۔ ٹی وی ڈرامے کا مقصد لوگوں کو تفریح فراہم کرنے کے ساتھ معاشرے کے حقیقی مسائل کو اجاگر کر کے اس کی اصلاح کے لئے ذمہ دارو ں کو بیدا کرنا ہے ۔پی ٹی وی یہ فریضہ سر انجام دے رہا تھا جس کے بعد مختلف نجی ٹی وی چینلز بھی اس ڈگر پر چلے لیکن یہ سلسلہ زیادہ طویل نہیں ہو سکا ۔انہوں نے کہا کہ آج کے ڈرامہ سیریل میں نیا ٹرینڈ متعارف کرایا گیا ہے جس میں بڑی بڑی گاڑیاں ، محلاات نما گھر اورصرف امیر کبیر خاندانوں کو موضوع بنایا جاتا ہے ،رومانس کو بھی بولڈ انداز میں دکھایا جارہا ہے جو ڈرامے کی اصل روح کے منافی ہے ۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •