Voice of Asia News

پارکنسن کے مریضوں پر ری پروگرام شدہ مادر خلیوں کے تجربات کے حوصلہ افزا نتائج ، جاپانی ماہرین

ٹوکیو (وائس آف ایشیا) جاپان کی کیوتو یونیورسٹی کے سائنسدانوں کی ایک ٹیم نے کہا ہے کہ پارکنسن کے مریضوں پر ری پروگرام شدہ مادر خلیوں کے نتائج حوصلہ افزا رہے ہیں۔ جاپانی نشریاتی ادارے کے مطابق پارکنسن کے مریضوں پر کئے گئے تجربات میں آئی پی ایس مادر خلیے استعمال کیے گئے۔ انسانی جسم کے خلیات کو اس طرح ری پروگرام کیا گیا ہے کہ وہ انسانی جسم کے کسی بھی عضو میں تبدیل ہو سکتے ہیں۔پارکنسن ناقابل علاج مرض ہے جو دماغ کے اعصابی خلیوں کے ضائع ہونے سے لاحق ہوتا ہے۔یہ اعصابی خلیے، خلیوں کے درمیان رابطہ کاری کے لیے ٹرانسمیٹر، ڈوپامائن پیدا کرتے ہیں۔ مذکورہ ٹیم نے اکتوبر 2018 میں ری پروگرام شدہ مادر خلیے ایک مریض کے دماغ میں داخل کیے تھے۔ انہیں امید تھی کہ یہ خلیے نیورونز میں تبدیل ہوں گے اورجسم کو دوبارہ فعال ہونے میں مدد دیں گے۔یہ طریقہ کار گزشتہ سال دو مزید مریضوں پر آ زمایا گیا تھا۔ ٹیم کے مطابق کسی بھی مریض میں ان خلیوں کے سرطان زدہ خلیوں میں تبدیل ہونے جیسے ضمنی اثرات ظاہر نہیں ہوئے۔ واضح رہے کہ آئندہ مالی سال میں 4 مزید مریضوں پر یہ تجربات کیے جانے کا منصوبہ ہے۔
وائس آف ایشیا6فروری2020 خبر نمبر12

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •