Voice of Asia News

کرونا وائرس کا خوف اور اﷲ سے دوری :راجہ حسن اختر

 
کرونا واورس نے پوری دنیا میں خوف و ہراس پھیلا دیا ہے نظر نہ آنے والے اس مہلک جراثیم سے انسان جس طرح خوف زدہ ہوچکا ہے کاش ایسا خوف اسے اپنے خالق کا ہوتا تو خالق اس خوف کے بدلے انسان کو لازوال نعمتوں سے نوازتا جبکہ مہلک جراثیم انسان کو خوف کے بدلے موت دے رہا ہے – اﷲ تعالی ہم سب کا خالق ہے مسلمانوں کے علاوہ جو لوگ دوسرے مذاہب کو مانتے ہیں ان کا رب پر یقین ہوتا ہے تقریبا تمام ذاہب میں اﷲ تعالی کا تصور کسی نہ کسی صورت میں موجود ہے ، انسان برملا اس بات کا اعتراف کرتا ہے کہ ہر شرے کا خالق اﷲ تعالی ہے ، خوشی، غم، صحت ، تندرستی ، بیمار ، موت سب اﷲ کے اختیار میں ہے کیا ہی اچھا ہوتا اﷲ کو ماننے والے ایک جماعت بن جاتے تو یہ دنیا جنت نظیر ہوجاتی، مجھے حیرت ہوتیہے کہ ہم کس طرح اﷲ سے بے خوف ہیں اور ایک نظر نہ آنے والی مخلوق سے حوف زدہ ہیں، ہمیں معلوم ہے زندگی اور موت اﷲ کے اختیار میں مگر پھر ہم اﷲ سے زیادہ بیماری سے ڈرتے ہیں-ہمارا خالق اﷲ ہم سے کس قدر خوش جب وہ دیکھے کہ انسان اﷲ سے ڈر رہا ہے ، اﷲ سے ڈرنے کیوجہ سے خالق اپنی مخلوق کو بے پناہ انعام و اکرامات سے نوازے جبکہ مخلوق کسی دوسری مخلوق سے خالق سے زیادہ خوف زدہ ہوتی ہے تو پھر مخلوق بے پناہ تباہی لاتی ہے کیونکہ مخلوق کا رویہ خالق کی نسبت مختلف ہوتاہے – مخلوق مخلوق سے خوف زدہ ہوجائے تو بات سمجھ میں آتی ہے مگر جب آج کا مسلمان اگر مخلوق سے خوف زدہ ہوتا ہے تو پھر بڑی حیرت ہوتی ہے – مرد مسلمان اگر مخلوق سے ڈر جائے ایسا ہو نہیں سکتا، کرونا وائرس سے ساری دنیا ڈر گئی، ساری دنیا نے اپنے دروازے بند کر لیے مجھے حیرت اس وقت ہووی جب مکہ اور مدینے کے دروازے زائرین کے لیے بند کردئیے، ہر مسلمان کو معلوم ہے یہ دونوں شہر متبرک ہیں یہاں خون خرابہ منع ہے یہ دونوں شہر حمت والے شہر ہیں ، مدینہ ایسا شہر ہے جہاں دجال داخل نہ ہوسکے گا، دونوں شہر خالق کے اپنے شہر ہیں اور یہ کیسے ہوسکتاہے کہ مخلوق اپنے خال پہ غالب آجائے -یہ بہترین موقعہ تھا ہم دنیا کو بتاتے کہ کس طرح یہ امن اور شانتی والے شہر ہیں ہم اگر ان شہروں کی حرمت کی قسم اٹھالیتے تو رب ہماری بات کا بھرم رکھتا اور یقینا یہ دونوں شہر ہر قسم کی آفات و بلیات سے محفوظ شہر ہیں- میرا ایمان ہے زندگی موت اﷲ تعالی کے ہاتھ میں ہے ، ہمیں اﷲ سے زیادہ ڈرنا چاہیے، رب کی اجازت کے بغیر نہ کرونا ہمیں بیمار کرسکتا ہے نہ ہمیں موت کے منہ میں دھکیل سکتا ہے ، اﷲ کے اذن کے بغیر کچھ نہیں ہوتا ، ہمیں اپنے متبرک شہروں مکہ اور مدینہ کو کھول دینا چاہیے مجھے یقین ہے کہ جو بھی مکہ اور مدینہ کے حرمت والے مقام پر چلا گیا وہ محفوظ رہے گا کیونکہ دجال ساری دنیا میں جائے گا مگر مدینہ میں نہ جاسکے گا اور یہ بات ذہن میں رکھیں کرونا وائرس بھی ایک دجالی ہتھیار ہے اور یہ دجالی ہتھیار مدینہ منور ہ داخل نہیں ہوسکتا، میرے بس میں کچھ نہیں ہے ورنہ میں یہ دو شہر دنیا بھر کے لوگوں کے لیے کھول دوں اور ان کو اسلام کی حقانیت بتاؤں یہ بہترین موقعہ ہے کہ ہم اسلام کی حقانیت کو دنیا پر ثابت کرسکتے ہیں، ہمیں مسجدوں میں جمعتہ المبارک کے اجتماعات پر پابندی نہیں لگانی چاہیے ہمیں اپنے خالق کے ساتھ جڑے رہنا ہے اور ہمیں کرونا کو شکست دے کر زندہ رہنا ہے کرونا وائرس اﷲ کے اذن کے بغیر آپکے قریب نہیں آسکتا اور اگر آپ اﷲ پر بھروسہ رکھیں تو یقینا یہ کبھی آپ تک رسائی کی جرات نہیں کرسکے گا، احتیاط ضروری ہے مگر احتیاط سے زیادہ اﷲ پر توکل اور بھروسہ ضروری ہے ، ہمیں مسلمان ہونے کے ناطے اﷲ پر بھروسہ کرنا چاہیے-یہ مہلک وائرس مکہ اور مدینہ داخل نہ ہوسکے گا اور ہمیں یہ بات ذہن میں رکھنی چاہیے کہ ایک مسلمان بے شک جتنا بھی گنہگار ہو مکہ اور مدینہ اس کے دل میں ہے ، وہ کلمہ پڑھتا ہے کلمہ کا پہلا حصہ مکہ سے متعلق ہے اور کلکہ کے دوسرے حقے کا تعلق مدینہ طیبہ سے ہے ، اس بیماری اور اس آزمائش کو اﷲ تعالی سے قربت کا ذریعہ بنائیں اپنی بخشش کا ذریعہ بنائیں اور اﷲ سے اپنی محبت اور اﷲ کے رسول ﷺ سے اپنی محبت میں اضافہ کا سب بنائیں اور اﷲ سے اپنی محبت اور اﷲ کے رسول ﷺ سے اپنی محبت میں اضافہ کا سبب بناویں نہ ئاورس آپکے قریب آسکتا ہے اور نہ ہی آپ کو نقصان پہنچا سکتا- اﷲ تعالی سے دعا کریں آنے والے چند دنوں میں پاکستان میں ٹمپریچر 40ڈگری تک چلا جائے تو یہ وائرس دم تور دے گا، ہمیں مسجدوں سے آذانوں کی صدا بلند کرنی چاہیے ہمیں خصوصی دعائیں مانگنی چاہیں کہ یا اﷲ اس مشکل گھڑی میں ہماری مدد فرما اور پاکستان میں ٹمریچر 40 کردے تاکہ ہم سنجدہ شکریہ ادا کرسکیں، ہمارے پاس وائرس کے مقابلے کے لیے مناسب انتظامات نہیں ہیں مگر ہمارے پاس اﷲ تعالی کا یقین اور بھروسہ ہے اور یہ بات اچھی طرح ذہن نشین کرلیں کہ اﷲ کبھی کسی کے بھروسے کو توڑتا نہیں ہے آئیے، اجتماعی نمازوں اور اجتماعی دعاؤں کا اہتمام کریں تاکہ اﷲ ہمیں اس آزمائش سے سرخرو کردے -آمین

rajahassanakhtar@gmail.com

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •