Voice of Asia News

صحافیوں کے خلاف مقدمے درج کرنا کسی بھی صورت میں جائز نہیں: عمر عبداﷲ

سرینگر(وائس آف ایشیا )نیشنل کانفرنس کے نائب صدر و سابق وزیر اعلی عمر عبداﷲ نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں صحافیوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی مہم کسی بھی صورت میں جائز نہیں ہے اور اس مہم کو بند کیا جانا چاہئے۔ عمر عبداﷲ نے اس سلسلے میں اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا: ‘کوئی اگر مگر نہیں، کشمیر میں صحافیوں اور مبصروں کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی یہ مہم غلط ہے اور اس کو بند کیا جانا چاہئے۔ اگر واقعات کے حوالے سے آپ کا ورڑن اس قدر کمزور ہے کہ آپ کو ان لوگوں کے خلاف کیس درج کرنا پڑتا ہے تو اس سے ان کے لکھے ہوئے سے بھی زیادہ کشمیر کی صورتحال کی عکاسی ہوتی ہے’۔ پی ڈی پی صدر و سابق وزیر اعلی محبوبہ مفتی کی صاحبزادی التجا مفتی نے صحافیوں کے خلاف آیف آئی درج کرنے کو نا معقول حرکت قرار دیتے ہوئے کہا کہ وبا کے دوران بھی یہاں صحافیوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی مہم تیز ہے۔انہوں نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا: ‘صحافیوں کے خلاف وبا کے بیچ ایف آئی آر درج کرنا اور ان کے خلاف یو اے پی اے جیسے قوانین کا اطلاق نامعقول حرکت ہے، گوہر گیلانی اس فہرست کا تازہ نام ہے، یہ ہندوستان میں اقلیتی فرقوں کا جنت ہے’
وائس آف ایشیا،23 اپریل2020خبر نمبر 95

image_pdfimage_print
شیئرکریں