Voice of Asia News

رواں سال اسرائیلی فوج کے ہاتھوں 400 فلسطینی بچے گرفتار

مقبوضہ بیت المقدس(وائس آف ایشیا) رواں سال کے دوران قابض اسرائیلی فوج نے 400 فلسطینی بچوں کو حراست میں لینے کے بعد انہیں پابند سلاسل کیا ہے۔کلب برائے اسیران کی طرف سے بچوں کیعالمی دن کے موقعے پرعالمی برادری کو توجہ مبذول کراتے ہوئے کہا ہے کہ رواں سال یکم جنوری سے 20 اکتوبر تک اسرائیلی فوج کے ہاتھوں کم سے کم 400 فلسطینی بچوں?کو گرفتار گیا۔کلب برائے اسیران کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج کے ہاتھوں 18 سال سے کم عمر کے 400 بچوں?کو گرفتار کرنے کے بعد زندانوں میں ڈالا گیا، گرفتار ہونے والے بچوں کی اکثریت مقبوضہ بیت المقدس سے تعلق رکھتی ہے۔ان بچوں?کو اسرائیل کی دامون، عوفر اور مجد جیلوں?میں قید کیا گیا۔ ان میں سی170 بچے بدستورپابند سلاسل ہیں۔رپورٹ میں?کہا گیا ہے کہ اسرئیلی ریاست ایک سوچے سمجھے منصوبیکے تحت فلسطینی بچوں کو گرفتار کرتی ہے تا کہ ان کے تعلیمی مراحل میں رکاوٹ ڈالی جائے اور انہیں قید وبند میں ڈال کر حصول تعلیم سے محروم رکھا جائے۔ان کا کہنا ہے کہ کورونا کی وبا کے باوجود اسرائیلی فوج کے ہاتھوں فلسطینی بچوں? کی اندھا دھند گرفتاریوں?کا سلسلہ جاری رہا ہے۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے