Voice of Asia News

احسن اونتو کی آسیہ اندرابی، فہمیدہ صوفی اور ناہیدہ نسرین کی مسلسل نظربندی کی مذمت

سرینگر( وائس آف ایشیا )غیر قانونی طور پربھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میںانٹرنیشنل فورم فار جسٹس اینڈ ہیومن رائٹس کے چیئرمین محمد احسن اونتو نے دختران ملت کی سربراہ آسیہ اندرابی، فہمیدہ صوفی اور ناہیدہ نسرین کی گزشتہ تین سال سے زائد عرصے سے مسلسل غیر قانونی اور غیر اخلاقی نظربندی کی شدید مذمت کی ہے۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق محمد احسن انتو نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ انہوںنے پہلے ہی کشمیر کی ان قابل فخر بیٹیوں کامعاملہ انسانی حقوق کے بین الاقوامی اداروں اور دیگر متعلقہ شخصیات کے ساتھ اٹھایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ پانچ پانچ سال سے نظربندپلوامہ کی سائقہ اختر اور اسلام آباد کی شازیہ اختر ، چار سال سے نظربند کھنموہ کی آسیہ بانو اور 9سال سے نظربند رام پورہ کولگام کی نسرینہ بیگم کے والدین کورونا وائرس کی وبا کے دوران اپنی بیٹیوں کی صحت یابی اورعدالتی انصاف کے فقدان سے پریشان ہیں۔انہوںنے کہاکہ ان معصوم خواتین قیدیوں کو من گھڑت اور جھوٹے الزامات کے تحت گرفتار کیا گیا تھا اور کئی سال گزرجانے کے باوجود قابض حکام نے ابھی تک کوئی عدالتی کارروائی شروع نہیں کی۔ انہوںنے کہاکہ ان کے والدین نے انصاف کی فراہمی اور رہائی کے لئے عدلیہ سے رجوع کیاتھا جو ان کا حق ہے لیکن بدقسمتی سے متعلقہ حکام نے انسانیت اور انصاف کے تمام بنیادی اصولوں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے کوئی اقدام نہیں کیا ۔محمد احسن انتو نے کہاکہ انٹرنیشنل فورم فار جسٹس اینڈ ہیومن رائٹس اب انسانی حقوق کے بین الاقوامی اداروں سے رجوع کرے گا تاکہ وہ بھارتی حکام پر دباؤ ڈال سکے اور مذکورہ بالا تمام معاملات میں انصاف کی فراہمی ہو اور کشمیر کی ان معصوم بیٹیوں کو رہا کیا جائے اور وہ اپنے اہل خانہ سے مل سکیں۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے