Voice of Asia News

شہباز شریف اور حمزہ شہباز پیرول پر کوٹ لکھپت جیل سے رہا

لاہور( وائس آف ایشیا ) مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف اور ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز شریف کو پیرول پر کوٹ لکھپت جیل سے رہا کردیا گیا ، اپوزیشن رہنماوں کی رہائی دن 4 بجکر 15 منٹ پر عمل میں لائی گئی ، اس موقع پر سابق وزیراعلیٰ پنجاب کا سیکیورٹی سٹاف بھی کوٹ لکھپت جیل کے باہر پہنچ گیا۔ بتایا گیا ہے کہ اس سے پہلے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف اور پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز کو پانچ روز کیلئے پرول پر رہا کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا گیا ، جس کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کو بیگم شمیم اختر کی نماز جنازہ میں شرکت کے لیے آج پانچ روز کے لیے پرول پر رہا کیا گیا۔اس سلسلے میں محکمہ داخلہ پنجاب نے بتایا کہ شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی پرول پر رہائی آج سے یکم دسمبر تک ہوگی ، پنجاب حکومت نے پاکستان پریزن رولز 1978ء کے سیکشن 545 بی کے تحت اپوزیشن رہنماوں کی رہائی کی اجازت دی۔قبل ازیں پنجاب کابینہ نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف اور ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز کی 5 روز کیلئے پیرول پر رہائی کی منظور ی دے دی ہے، محکمہ داخلہ نے تھروسرکولیشن کابینہ سے منظوری لی، مسلم لیگ ن نے پیرول پر دوہفتے کی رہائی کیلئے درخواست دی تھی۔تفصیلات کے مطابق ن لیگ کی قیادت نے پارٹی صدر میاں شہبازشریف اور اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کی پیرول پردوہفتے رہائی کیلئے درخواست دی تھی۔ دونوں کی پیرول پر رہائی بیگم شمیم اختر کے انتقال پر دی جارہی ہے۔ محکمہ داخلہ پنجاب نے اس حوالے سے واضح کیا تھا کہ وہ صرف 12گھنٹے کیلئے رہائی دے سکتا ہے، اس سے زیادہ پیرول پر رہائی دینے کااختیار وزیراعلیٰ پنجاب کے پاس ہے۔ جس پر محکمہ داخلہ نے وزیراعلیٰ پنجاب کو ایک سرکولیشن بھیجا، وزیراعلیٰ نے سمری پنجاب کابینہ کو بھجوائی، تاہم پنجاب کابینہ نے وزیراعلیٰ کی سمری پر فیصلہ کرتے ہوئے شہبازشریف اور حمزہ شہباز کی 5 روز کیلئے پیرول پر رہائی کی منظور ی دے دی ہے۔ پیرول پر رہائی کا عمل میت پاکستان پہنچنے پر شروع ہوجائے گا۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے