Voice of Asia News

بلوچستان، فائرنگ کے تبادلے میں 2 دہشتگرد مارے گئے  ۔ڈی جی آئی ایس پی آر

راولپنڈی ( وائس آف ایشیا ) بلوچستان میں فائرنگ کے تبادلے میں 2 دہشتگرد ہلاک ہو گئے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ بلوچستان کے علاقے مشکئی میں دہشتگردی کی موجودگی کی اطلاع پر آپریشن کیا گیا۔ فائرنگ کے تبادلے میں 2 دہشتگرد مارے گئے۔دہشتگردوں کی فائرنگ سے 2 اہلکار بھی شہید ہوئے۔ نائیک تاج ولی اور سپاہی اسامہ شہید ہوئے جب کہ ایک افسر زخمی ہوا۔آئی ایس پی آر نے مزید کہا کہ دہشتگرد آواران میں دہشتگردی کی وارداروں میں ملوث تھے۔آپریشن کئے دوران بڑی تعداد میں اسلحہ اور بارود برآمد کیا گیا۔ آپریشن کے دوران دہشتگردوں نے فرار کی بھی کوشش کی۔خیال رہے کہ اس سے قبل دہشت گردوں کی ٹانک میں ملٹری کمپاؤنڈ میں گھسنے کی کوشش ناکام بنادی گئی، فائرنگ کے تبادلے میں تین دہشت گردوں کو ہلاک کردیا گیا جبکہ 6 جوان شہید ہوگئے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کے مطابق 3 دہشت گردوں نے جنرل ایریا ٹانک میں ملٹری کمپاؤنڈ میں داخل ہونے کی کوشش کی جسے سیکیورٹی اداروں نے ناکام بنادیا۔ سیکیورٹی فورسز نے مؤثر انداز میں جوابی کارروائی کرتے ہوئے تینوں دہشت گردوں کو ہلاک کیا اور فوجی کمپاؤنڈ میں داخلے کی کوشش کو ناکام بنایا۔ دہشتگردوں کے ساتھ فائرنگ کے شدید تبادلے میں پاک فوج کے 6 جوانوں نے بہادری سے لڑتے ہوئے شہادت کو گلے لگا لیا۔آئی ایس پی آر کے مطابق شہداء میں نوشہرو فیروز کے 48 سالہ صوبیدار میجر شیر محمد ،خیرپور کے 39 سالہ نائب صوبیدار زبید ، راولپنڈی کے 39 سالہ حوالدار سہیل ، ٹنڈوالہ یار کے 36 سالہ لانس نائیک غلام،خیرپور کے 32 سالہ سپاہی مسکین علی ،سکھر کے 37 سالہ سپاہی میر محمد شامل ہیں ۔آئی ایس پی آر کا مزید کہنا ہے کہ پاک فوج دہشت گردی کو ختم کرنے کے لیے پرعزم ہے اور ہمارے بہادر جوانوں کی قربانیاں ہمارے عزم کو مزید مضبوط کرتی ہیں۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں