Voice of Asia News

شمالی وزیرستان میں افغانستان سے دہشت گردوں کی پاکستان میں فائرنگ، تین جوان شہید

شمالی وزیرستان(وائس آ ف ایشیا) شمالی وزیرستان میں افغانستان سے دہشت گردوں کی فائرنگ کے نتیجے میں تین پاکستانی فوجی شہید ہو گئے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق بین الاقوامی سرحد کے اس پار افغانستان کے اندر سے دہشت گردوں نے شمالی وزیرستان کے ضلع دیواگر کے علاقے میں پاکستانی فوجیوں پر فائرنگ کی جس کا پاکستانی فوجیوں نے مناسب انداز میں جواب دیا۔مصدقہ انٹیلی جنس رپورٹس کے مطابق پاکستانی فوجیوں کی جوابی فائرنگ سے دہشت گردوں کو بھاری جانی نقصان پہنچا تاہم فائرنگ کے تبادلے کے دوران جہلم کے 30سالہ حوالدار تیمور، اٹک کے 38سالہ نائیک شعیب اور سیالکوٹ کے 24سالہ سپاہی ثاقب نواز نے بہادری سے لڑتے ہوئے جام شہادت نوش کیا۔بیان میں کہا گیا کہ پاکستان دہشت گردوں کی جانب سے افغان سرزمین کو پاکستان کے خلاف سرگرمیوں کے لیے استعمال کرنے کی شدید مذمت کرتا ہے اور توقع کرتا ہے کہ افغان حکومت مستقبل میں ایسی سرگرمیوں کی اجازت نہیں دے گی۔آئی ایس پی آر نے کہا کہ پاک فوج دہشت گردی کی لعنت کے خلاف پاکستانی سرحدوں کے دفاع کے لیے پرعزم ہے اور ہمارے بہادر جوانوں کی ایسی قربانیاں ہمارے عزم کو مزید مضبوط کرتی ہیں۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں