Voice of Asia News

افریقہ میں20لاکھ بچے بھوک کے سبب موت کے منہ میں جا سکتے ہیں، اقوام متحدہ

 نیویارک (وائس آ ف ایشیا)اقوام متحدہ کی امداد سے متعلق ایجنسی کے سربراہ مارٹن گریفِتھس نے کہا ہے کہ ہارن آف افریقہ کہلانے والے خطے میں قریب دو ملین بچے بھوک کے سبب موت کے منہ میں چلے جانے کے خطرے سے دوچار ہیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق کینیا، ایتھوپیا اور صومالیہ کے کچھ حصے کئی دہائیوں کی بدترین خشک سالی کا شکار ہیں۔اس علاقے کے 15 ملین سے زائد افراد انتہائی بھوک کے خطرے سے دوچار ہیں۔ امدادی اداروں کو امید ہے کہ ایک دہائی قبل یہاں پڑنے والے قحط جیسے حالات سے بچا جا سکے گا جس میں لاکھوں افراد ہلاک ہوئے تھے۔ جینیوا میں ہونے والی کانفرنس میں گریفتھس نے کہا کہ اس خطے کے لیے درکار 1.4 بلین ڈالرز کی امداد کا بہت کم حصہ ہی اس ایجنسی کے پاس موجود ہے۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں