Voice of Asia News

فنکارکوفنون لطیفہ کے تمام شعبوں میں کام کرنا چاہیے،لیلیٰ

لاہور(وائس آ ف ایشیا )پاداکارہ وماڈل لیلیٰ نے کہا ہے کہ پاکستان میں بننے والی فلموں کو ہم مکمل فلم تونہیں کہہ سکتے لیکن جدید ٹیکنالوجی کے ساتھ جوکام کیا جارہا ہے اس سے ہماری فلم کے معیار میں بہتری دکھائی دے رہی ہے۔ان خیالات کا اظہار اداکارہ لیلیٰ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ایک نوجوان جب شوبز کی دنیا میں قدم رکھتا ہے تواس کے کچھ ٹارگٹ ہوتے ہیں اورآگے بڑھنے کے لیے وہ کسی نہ کسی سے متاثر بھی ہوتا، جس کوسامنے رکھتے ہوئے وہ مختلف شعبوں میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منواتا ہے لیکن بدقسمتی سے ہمارے ہاں جب ایک فنکارکسی ٹی وی ڈرامہ میں مقبول ہوجائے توپھر اس کوٹی وی تک ہی محدود رہنے دیا جاتا ہے۔لیلیٰ مزیدنے کہا کہ فلم انڈسٹری میں کسی کواچھا مقام مل جائے توپھروہ ٹی وی پرکام کرنے کوترجیح نہیں دیتا۔ حالانکہ ایک فنکارکوفنون لطیفہ کے تمام شعبوں میں کام کرنا چاہیے۔ کیونکہ فنون لطیفہ کے تمام شعبوں میں کام کرنے سے کوئی بھی فنکاربڑا یا چھوٹا نہیں ہوتا بلکہ یہ اس کی تربیت کا ایک ایسا حصہ ہوتا ہے، جس کو سمجھنا بے حد ضروری ہے۔ یہی وجہ ہے کہ میں نے اپنا فنی سفرفلم انڈسٹری سے شروع کیا، لیکن پھرمیں نے تھیٹراورٹی وی پربھی کام کیا اوریہ سلسلہ جاری ہے۔ لیلیٰ نے کہا کہ پاکستان میں اچھی اورمعیاری فلموں کا دورواپس آرہا ہے، اسی لیے میں بھی ان دنوں شمالی علاقہ جات میں کچھ نئے پراجیکٹس کی شوٹنگز میں مصروف ہوں۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں