Voice of Asia News

برطانیہ میں روسی میڈیا پر نئی پابندیاں ، ماسکو میں برطانوی سفیر کی طلبی

ماسکو(وائس آ ف ایشیا) روس نے برطانیہ میں روسی میڈیا پر نئی پابندیوں کے معاملہ پر برطانوی سفیر ڈیبورا برونرٹ کو وزارت خارجہ میں طلب کر کے خبر دار کیا ہے۔ برطانوی اخبار دی گارڈین کے مطابق روسی وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں کہا کہ روس برطانیہ کی جانب سے لگائی گئی تمام پابندیوں پر سخت اور فیصلہ کن ردعمل کا اظہار کرتا رہے گا۔برطانیہ نے رواں ہفتے کے شروع میں روس کے سرکاری ٹیلی ویڑن چینل ون کے خلاف پابندیوں کا اعلان کرتے ہوئے اس پر الزام لگایا تھا کہ وہ روس میں غلط معلومات پھیلا رہا ہے اور روسی صدر ولادیمیرپوٹن کے یوکرین میں غیر قانونی حملے کوخصوصی فوجی آپریشن کے طور پر پیش کرتا ہے۔برطانیہ نے یوکرین میں روسی فوج کے ساتھ جانے والے روسی صحافیوں کے ایک گروپ پر بھی پابندیاں عائد کی ہیں ، جن میں آل روس سٹیٹ ٹیلی ویڑن اور ریڈیو براڈکاسٹنگ کمپنی کے جنگی نمائندے ایوگینی پوڈوبنی، روسی اخبار کومسومولسکایا پراودا کے جنگی نمائندے الیگزینڈر کوٹس اور دمتری سٹیشین شامل ہیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے آر ٹی اور سپٹنک کی ویب سائٹس کے خلاف بھی کارروائی کی ہے۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں