Voice of Asia News

روسی تیل پر یورپی یونین کی تجویز کردہ نئی پابندیاں معیشت پر ایٹم بم گرانے کے مترادف ہونگی ،وکٹر اوربان

بڈاپسٹ(وائس آ ف ایشیا) یورپی ملک ہنگری کے قوم پرست وزیر اعظم وکٹر اوربان نے کہا ہے کہ روسی تیل پر یورپی یونین کی طرف سے تجویز کردہ نئی پابندیاں ہنگری کی معیشت پر ایٹم بم گرانے کے مترادف ہونگی ،انہیں قبول نہیں کیا جائے گا۔جرمن میڈیا کے مطابق سرکاری ریڈیو سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم وکٹر اوربان نے کہا کہ روس کے خلاف نئی پابندیوں کی حمایت نہیں کی جائیگی، ان مجوزہ پابندیوں میں روسی تیل کی برآمدات پر پابندی شامل ہے۔انہوں نے کہا کہ ہنگری حکومت ملکی مفادات کے لیے یورپی یونین کے ساتھ اس حوالے سے مذاکرات کے لیے تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ روسی تیل پر یورپی یونین کی طرف سے تجویز کردہ نئی پابندیاں ہنگری کی معیشت پر ایٹم بم گرانے کے مترادف ہونگی انہیں قبول نہیں کیا جائے گا۔ہنگری کے مطابق توانائی کے موجودہ انفراسٹرکچر کے تناظر میں روسی تیل پر پابندی کے سنگین نتائج مرتب ہوسکتے ہیں۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں