Voice of Asia News

ڈی جی آئی ایس پی آر کا بیان فوج کے اندر کی سوچوں کی ترجمانی کرتا ہے ؛ شیخ رشید احمد

راولپنڈی (وائس آ ف ایشیا) عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ ڈی جی آئی ایس پی آر کا بیان فوج کے اندر کی سوچوں کی ترجمانی کرتا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ نوازشریف ، مریم نواز اور آصف زرداری نے فو ج کو نشانے پر رکھا ہوا ہے ، چھٹی بار ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہافوج کو سیاست میں نہ گھسیٹیں ، ڈی جی آئی ایس پی آر کا بیان فوج کے اندر کی سوچوں کی ترجمانی کرتا ہے ، بلاول کو ایک وزیر مارشل لاء کی دھمکی دیتا ہے جو بھونڈا مذاق ہے ۔سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ موجودہ مسائل کا حل عبوری حکومت کا قیام ہے ، ملکی مسائل کا واحد حل ہے الیکشن کرائے جائیں ، انتخابات نہ کرائے گئے تو ملک سری لنکا کی حالات کی طرف جاسکتا ہے ، پھر کسی کے ہاتھ کچھ نہیں آئے گا اور جھاڑو پھر جائے گا ۔گزشتہ روز ڈائریکٹر جنرل آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا تھا کہ کچھ دنوں میں پاکستان کی تمام سیاسی لیڈرشپ نے کچھ ایسے بیانات دیے جس کا براہ راست منفی اثرات مسلح افواج کے سپاہ اور قیادت پر مرتب ہو رہے ہیں، اس لیے بار بار اس پر زور دیا کہ فوج کو سیاسی گفتگو سے باہر رکھیں ، اگر کوئی سمجھتا ہے کہ فوج کو تقسیم کیا جاسکتا ہے تو یہ بھول ہے،ساری فوج آرمی چیف کی طرف دیکھتی ہے ۔  انہوں نے کہا کہ پچھلے 74سال سے عوام اور سیاسی قیادت کا بھی یہی مطالبہ رہا ہے کہ فوج غیرسیاسی ہو، جب اب ادارے نے فیصلہ کیا اور واضح طور بتا بھی دیا ، یہ فرد واحد کا نہیں بلکہ پوری فوج کا فیصلہ ہے، ہمارے سکیورٹی چیلنجز اتنے ہیں،کہ ہم ملکی سیاست میں ملوث نہیں ہوسکتے، ہمیں ملک کی حفاظت کیلئے بڑی محنت کی ضرورت ہے، کیونکہ ملکی سیکورٹی میں کوئی غفلت ہوئی تو معافی کی کوئی گنجائش نہیں، اگر کوئی سمجھتا ہے کہ فوج کو تقسیم کیا جاسکتا ہے تو یہ بھول ہے، پاک فوج مکمل طور پرمتحد ادارہ ہے ،یہ ایک لڑی میں پروئی ہوئی ہے، اور ساری فوج آرمی چیف کی طرف دیکھتی ہے، سپاہی افسران اپنی قیادت کے حکم پر جانوں کا نذرانہ پیش کردیتے ہیں، پاکستان عوام اپنی فوج سے محبت کرتے ہیں، پاک فوج کا عوام کیلئے کردار ہمیشہ اچھا رہے گا، مسلح افواج اور عوام میں کسی قسم کی دراڑ نہیں آسکتی۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں