Voice of Asia News

ایتھوپیا میں خشک سالی سے 11 ملین سے زیادہ افراد متاثر ہوئے ہیں، اقوام متحدہ

اقوام متحدہ (وائس آ ف ایشیا) اقوام متحدہ کے انسانی ہمدردی کے ماہرین نےکہا ہے کہ صرف ایتھوپیا میں 11 ملین سے زیادہ لوگ خشک سالی سے متاثر ہوئے ہیں۔ چینی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے دفتر برائے رابطہ برائے انسانی امور (او سی ایچ اے) نے کہا ہے کہ 7.2 ملین سے زائد لوگوں کو خوراک کی امداد کی ضرورت ہے جبکہ 4 ملین افراد کو پانی کی امداد کی ضرورت ہے۔انہوں نے آگاہ کیا کہ ایتھوپیا میں کم از کم 286,000 لوگ پانی، چراگاہوں اورامداد کی تلاش میں نقل مکانی کر چکے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ یہ وہ لوگ ہیں جن کے پاس سفر کرنے کے ذرائع ہیں۔ دفتر نے کہا کہ چراگاہ اور پانی کی کمی نے کم از کم 1.5 ملین مویشیوں کی جان لی جبکہ مزید 10 ملین مویشی خطرے میں ہیں۔انسانی ہمدردی کے دفتر نے کہا کہ شدید خشک سالی سے 500,000 سے زیادہ بچوں کی اسکولنگ متاثر ہوئی ہے ۔او سی ایچ اے نے کہا کہ اس کے انسانی ہمدردی کے شراکت دار ایتھوپیا کی حکومت کی مدد کرتے ہوئے امداد میں اضافہ کر رہے ہیں۔ ہیومینٹیرینز نے تقریباً 4.9 ملین لوگوں کو خوراک فراہم کی، 2 ملین سے زیادہ سر مویشیوں کا علاج کیا اور 3.3 ملین سے زائد افراد کو پانی کی فراہمی یقینی بنائی۔ اقوام متحدہ کے ایمرجنسی ریلیف کوآرڈینیٹر مارٹن گریفتھس نے کہا کہ انہوں نے انسانی ہمدردی کی کارروائی میں مدد کے لیے سینٹرل ایمرجنسی رسپانس فنڈ سے 12 ملین امریکی ڈالر جاری کیے ہیں۔ایتھوپیا کے انسانی ہمدردی کے امدادی فنڈ نے بھی بحران کے لیے 17 ملین ڈالر مختص کیے ہیں تاہم اقوام متحدہ کے دفتر برائے رابطہ برائے انسانی امور نے کہا کہ اضافی فنڈنگ ​​کی فوری ضرورت ہے۔ اقوام متحدہ اور انسانی ہمدردی کے شراکت داروں کو اکتوبر تک امداری کارروائیوں کے لیے 480 ملین ڈالر درکار ہیں۔ ■

image_pdfimage_print
شیئرکریں