Voice of Asia News

ہوم انٹرنیشنل سیریز کے حقوق میں 77 فیصد اضافہ، پی سی بی کا اعلان

لاہور (وائس آ ف ایشیا) عوامی بولی کے عمل کے مطابق جمعہ کو 2022-23ء سیزن کے دوران آنے والی بین الاقوامی مردوں اور خواتین کی ہوم سیریز کے لیے  نے شراکت داری کے مختلف حقوق حاصل کرنے کے لیے سب سے زیادہ بولی جمع کرائی۔ اس کامیاب بولی، جس نے پی سی بی کی جانب سے مقرر کردہ ریزرو قیمت سے تجاوز کیا، گزشتہ سیزن کے مقابلے میں 77 فیصد زیادہ ہے۔یہ پیشرفت پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے 12 ماہ کے مصروف شیڈول کا اعلان کرنے کے بعد سامنے آئی ہے جس دوران پاکستان پہلی بار آئی سی سی ویمنز چیمپئن شپ فکسچر اور انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کی مردوں کی ٹیموں کے دو دو دوروں کی میزبانی کرے گا۔ چیف ایگزیکٹیو فیصل حسنین کا کہنا تھا کہ ہمارے بین الاقوامی ہوم سیزن کے لیے شراکت داری کے حقوق میں اضافہ ایک مضبوط مارکیٹ کی دلچسپی کو نمایاں کرتا ہے، جسے پاکستان کرکٹ نے بہترین بین الاقوامی ٹیموں کی کامیابی کے ساتھ میزبانی کے ساتھ میدان میں مضبوط پرفارمنس کے ذریعے پیدا کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ پی سی بی ٹرانس گروپ ایف زیڈ ای کا شکریہ ادا کرتا ہے، جس کے ساتھ ہم پہلے ہی طویل اور صحت مند کاروباری تعلقات رکھتے ہیں، پاکستان کرکٹ کے لیے ان کی مسلسل حمایت کے لیے۔ میں پی سی بی کی کمرشل، فنانس اور قانونی ٹیموں کو بھی مبارکباد دیتا ہوں کہ ان کی انتھک کوششوں کے لیے ان نتائج کو حاصل کیا۔ TransGroup FZE گروپ کے ڈائریکٹر راؤ عمر ہاشم خان کا کہنا تھا کہ TransGroup FZE پاکستان کرکٹ بورڈ کے ساتھ 2022-2023ء ہوم انٹرنیشنل سیزن کے لیے دو طرفہ شراکت داری کے حقوق جیتنے پر اپنی طویل اور صحت مند شراکت داری کو بڑھانے پر خوش ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ TransGroup FZE کو امید ہے کہ 2022-23ء کے ہوم سیزن میں 50 اوور کے ورلڈ چیمپئن انگلینڈ اور آئی سی سی ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کے فاتح نیوزی لینڈ کے ساتھ ایک طویل عرصے کے بعد پاکستان کا دورہ کرنے والا ہے۔ انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کی ٹیموں کا دورہ پاکستان دلچسپ اور مسابقتی کرکٹ کو جنم دے گا جس سے پاکستان کرکٹ کو مزید مضبوط بنانے میں مدد ملے گی۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں