Breaking News
Voice of Asia News

بنگلہ دیش میں 68 فیصد خواتین سائبر کرائمز کا شکار

ڈھاکہ(وائس آف ایشیا)بنگلہ دیش میں خواتین سیہونے والی آن لائن بدسلوکی سینمٹنیکے لیے آل فیمیل ٹیم شروع کرنے کے دو دن بعد بنگلہ دیشی پولیس کا کہنا ہے کہ انہیں سائبر ہراسمینٹ کی تقریبا 1000 شکایات موصول ہوئی ہیں۔پولیس سائبر سپورٹ فار وویمن کی اسسٹنٹ سپرنٹنڈنٹ نسرین اختر نے عرب نیوز کو بتایا ’فون مسلسل بجتے رہے۔ہمیں پورے ملک سے خواتین کی کالیں موصول ہو رہی ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ سروس شروع کرنے کے بعد سے ہم نے تقریباً 1000 فون کالز رجسٹرڈ کیں۔بنگلہ دیش کے پولیس سربراہ بے نظیر احمد نے خواتین کے خلاف صنف پر مبنی تشدد اور سائبر کرائمز میں اضافے کی بڑھتی ہوئی عوامی تشویش کے بعد سائبر سپورٹ یونٹ کا آغاز کیا تھا۔نظیر احمد نے کہا کہ سائبر سپیس میں تقریبا 68ً فیصد خواتین سائبر کرائمز کا شکار ہو چکی ہیں۔پولیس کو امید ہے کہ یہ یونٹ خواتین کو ڈیجیٹل بدسلوکی بشمول’ریونج پورن‘ کی اطلاع دینے کی ترغیب دے گا، سوشل میڈیا کے مواد کا غلط استعمال اور بلیک میل کیونکہ شکایت کنندہ اپنی ذاتی تفصیلات مردوں کی بجائے آل وویمن ٹیم کے ساتھ شیئر کریں گی۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے