Breaking News
Voice of Asia News

آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس ، اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی پر فرد جرم عائد

کراچی ( وائس آف ایشیا ) احتساب عدالت نے آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں اسپیکر سندھ اسمبلی آغاسراج درانی اور دیگر ملزمان پر فرد جرم عائد کردی گئی ، پیپلزپارٹی کے اسپیکر سندھ اسمبلی اور دیگر ملزمان نے صحت جرم سے انکار کر دیا ، عدالت نے گواہان کو طلب کرلیا۔ تفصیلات کے مطابق کراچی کی احتساب عدالت کی طرف سے جن ملزمان پر فرد جرم عائد کی گئی ان میں آغا سراج درانی کی اہلیہ ناہید درانی ، ان کے صاحبزادے آغا شہباز درانی اور ان کے بھائی آغا مسیح الدین خان درانی بھی شامل ہیں اس کے ساتھ ساتھ اسیپکر سندھ اسمبلی کی بیٹیوں صنم درانی ، شہانہ درانی اور سارہ درانی پر بھی فرد جرم عائد کردی گئی۔بتایا گیا ہے کہ آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں دیگر شریک ملزمان میں طفیل احمد ، ذوالفقار ، آغا منورعلی ، غلام مرتضیٰ اور گل بہار بھی شامل ہیں جن پر فرد جرم عائد کی گئی ہے۔میڈیا ذرائع کے مطابق اس سلسلے میں نیب کی طرف سے دائر کیے گئے ریفرنس میں الزام عائد کیا گیا کہ آغاسراج درانی نے ایک ارب 61 کروڑ روپے سے زائد کے اثاثے بنائے جن میں سے انہوں نے کچھ جائیدادیں فروخت بھی کردیں جب کہ پیپلزپارٹی سے تعلق رکھنے والے اسپیکر سندھ اسمبلی کے غیر قانونی اثاثہ جات میں گھر اور35 گاڑیاں شامل ہیں ، جب کہ دیگر اثاثوں میں 11 گاڑیاں ، بیٹے ، اہلیہ اور بیٹوں کے نام پر کراچی اور ایبٹ آباد میں جائیداد شامل ہیں ، مذکورہ جائیدادوں کی خریداری کیلئے رقم کی ادائیگی ان کے ملازمین کے نام سے کی گئی۔ریفرنس میں بتایا گیا کہ نیب کی طرف سے مارے گئے چھاپے کے دوران مرکزی ملزم اور ان کے دیگر اہلخانہ سے 11کروڑ روپے کی قیمتی گھڑیاں برآمد ہوئیں جب کہ ان کے لاکر سے 350 تولے سونا بھی برآمد کیا گیا۔ نیب ذرائع کے مطابق اسپیکر سندھ اسمبلی آغاسراج درانی نے سال 2007ء سے سال 2018ء تک 11 کروڑ روپے آمدن ظاہر کی جو کہ زرعی زمنیوں کی بتائی گئی تاہم دوران تفتیش ملزم نے آمدنی 8 کروڑ بتائی۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے