Breaking News
Voice of Asia News

سیالکوٹ، پی ٹی آئی رہنما عثمان ڈار کو رہا کر دیا گیا

سیالکوٹ(وائس آ ف ایشیا) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار کو رہا کر دیا گیا۔عثمان ڈار سمیت پی ٹی آئی کے متعدد کارکنان کو آج جلسہ گاہ کے معاملے پر گرفتار کیا گیا تھا۔آج صبح سیالکوٹ میں پاکستان تحریک انصاف اورانتظامیہ کے درمیان جلسے کا معاملہ شدت اختیار کرگیا تھا۔ سیالکوٹ میں تحریک انصاف کی سی ٹی آئی گراؤنڈ میں بغیر اجازت جلسے کی تیاریاں کرنے پر پولیس نے عثمان ڈار سمیت کئی کارکنوں کو گرفتار کرلیا تھا ۔پولیس کی شیلنگ اور لاٹھی چارج پی ٹی آئی کارکن منتشر ہوگئے تھے۔ پولیس نے کرین کی مدد سے جلسہ گاہ سے سامان ہٹانا شروع کیا۔ ضلعی انتظامیہ نے تحریک انصاف کو جلسے کی اجازت نہیں دی تھی۔ اس موقع پر عثمان ڈار کا کہنا تھا کہ جیل میں ڈالنے سے کپتان کی محبت کم نہیں ہوگی، ہم جیل سے باہر نکلیں گے، پھر جلسہ کریں گے، عمران خان سیالکوٹ میں جلسہ کرنے آئیں گے، عمران خان کیساتھ کھڑے ہیں، جیلیں بھر دیں گے۔دوسری جانب ڈی پی او سیالکوٹ کا کہنا ہے کہ یہ مسیحی برادری کی جگہ ہے، مسیحی برادری نےکہا کہ ہماری جگہ پر سیاسی جماعت جلسہ کر رہی ہے، عبادت گاہ کے سامنے زبردستی جلسے کی اجازت نہیں دے سکتے۔ ہم انہیں جلسے کے لیے متبادل جگہ دینے کے لیے تیار ہیں۔مسیحی کمیونٹی نے ہائیکورٹ میں درخواست دی تھی، ہائیکورٹ کا حکم ہے کہ گراؤنڈ میں جلسے کو روکیں، ڈپٹی کمشنر نے جلسے کی جازت دینے سے انکار کر دیا ہے جبکہ ہمارے پاس ہدایات ہیں کہ قانون کے مطابق کارروائی کی جائے۔یہاں واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف نے سیالکوٹ میں جلسہ گاہ کا مقام تبدیل کر دیا۔پی ٹی آئی رہنما شفقت محمود نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ پی ٹی آئی کا جلسہ وی آئی پی کرکٹ گراؤنڈ میں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ سیالکوٹ میں ہمارے لوگ پر امن طور پر موجود تھے۔ہم اپنے لیڈران پر تشدد کی پرزور مذمت کرتے ہیں۔نااہل حکومت کو کہتے ہیں ہم اپنا جمہوری حق استعمال کر رہے ہیں۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں