Voice of Asia News

عمران خان کی جان کو خطرات، حکومت جوڈیشل کمیشن بنانے کی پیشکش

اسلام آباد (وائس آ ف ایشیا)وفاقی وزیر داخلہ راناثناء اللہ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ سابق وزیراعظم عمران خان نیازی امریکی سازش کی طرح اب مسلسل اپنی جان کو خطرے کا بیانیہ بنا رہے ہیں۔ جان کو ممکنہ خطرے سے متعلق اگر کوئی ٹھوس ثبوت سابق وزیراعظم عمران نیازی کے پاس ہے تو اسے وزارت داخلہ سے فی الفورشئیر کریں۔انہوں نے کہا کہ اگرعمران نیازی اپنی جان کو خطرے سے متعلق معلومات فراہم نہیں کرتے تو امریکی سازش کی طرح اس بیانیے کو بھی ایک پولیٹیکل سٹنٹ ہی تصور کیا جائے گا۔ایک سابق وزیراعظم کا اپنی جان کے خطرے کو پولیٹیکل سٹنٹ کے طور پر پیش کرنا انتہائی افسوسناک ہے اور خطرے کا باعث ہوسکتا ہے۔راناثناء اللہ نے کہا کہ میرا مشورہ ہے عمران نیازی اپنی سکیورٹی کو سیاسی پراپیگنڈے کے طور پر پیش نہ کرے، شواہد ہیں تو ہم سے شیئر کیے جائیں۔راناثناء اللہ نے یہ بھی کہا کہ اگر عمران خان چاہیں تو جان کو خطرے کے معاملے پر جوڈیشل کمیشن بھی بنا سکتے ہیں۔جوڈیشل عمران خان کے فراہم کردہ شواہد اور معلومات کا جائزہ لے کر آزادانہ فیصلہ دے سکتا ہے۔خیال رہے کہ وزیر اعظم شہباز شریف نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کو فُول پروف سکیورٹی فراہم کرنے کی ہدایت کی تھی ، وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ وزیراعظم کی جانب سے عمران خان کو فول پروف سکیورٹی فراہم کرنے کی ہدایت کی گئی ہے ، اس حوالے سے وزارتِ داخلہ کی جانب سے وزیر اعظم کو عمران خان کی سکیورٹی کے حوالے سے بریفنگ دی گئی ، جس کے بعد وزیر اعظم نے وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ کو عمران خان کو ہر حوالے سے بہترین سکیورٹی فراہم کرنے کی ہدایت کی ۔انہوں نے بتایا کہ وزیر اعظم نے چیئرمین پی ٹی آئی کو چیف سکیورٹی آفیسر فراہم کرنے کی بھی ہدایت کی ہے ، اس کے علاوہ وزیر اعظم نے صوبائی حکومتوں کو بھی عمران خان کو جلسے جلوسوں کے دوران سکیورٹی فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے ۔ خیال رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نےسیالکوٹ میں جلسے سے خطاب میں کہا تھا کہ چند دن پہلے مجھے علم ہوا بندکمروں میں میری جان لینے کی سازش ہورہی ہے ، میں نے ممکنہ ذمہ داروں کے ناموں کے ساتھ ویڈیو ریکارڈ کرادی ہے ، یہ ویڈیو محفوظ جگہ پر رکھوا دی ہے ، تاکہ لوگوں کو پتا چل سکے کہ کون کون میرے خلاف سازش کررہے تھے، یہ سمجھتے ہیں میں ان کی راہ میں رکاوٹ ہوں ، راستے سے ہٹایا جائے ۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں