Voice of Asia News

میانمار میں مظاہروں کی رپورٹنگ پر گرفتار فوٹوگرافر سمیت 600 افراد رہا

ینگونن ( وائس آف ایشیا) میانمار کی فوج نے جمہوریت کی حمایت اور فوج کے خلاف  ہونے والے مظاہروں کی رپورٹنگ کرنے والے گرفتار کیے گئے   امریکی خبر رساں ادارے  اے پی کے فوٹوگرافر سمیت 600  سے زائد افراد کو رہا کر دیا۔فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق  گزشتہ ماہ میانمار کے تجارتی  شہر ینگون  میں     فوجی بغاوت کے خلاف  ہونے والے مظاہروں  کی کوریج کرنے والے امریکی خبر رساں ادار ے اے پی    کے 32 سالہ فوٹوگرافر تھین زاو سمیت 600 سے زائد افراد کو بدھ کو ینگون کے علاقہ  انسین    کی جیل سے رہا کیا  گیا ۔رہائی پانے والے  فوٹوگرافر نے کہا کہ اس کی صحت بالکل ٹھیک ہے اور    وہ رہا ہونے کے بعد اپنی والدہ سے ملنے  واپس جارہا ہے   ۔  انہوں نے کہا کہ میرے خلاف مقدمہ دائر کرنے والے  پولیس افسر نے   لگایا گیا الزام واپس لے لیا یہی وجہ ہے کہ  انہوں نے مجھے بغیر بلا مشروط رہا کر دیا ۔ انسین جیل کے سینیئر عہدیدار  نے بتایا کہ جیل سے 360 مردوں اور 268 خواتین کو رہا کیا گیا ہے ۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے