Voice of Asia News

پاکستانی ٹیم میں اتحاد ڈریسنگ روم سے شروع ہوتا ہے: بابر اعظم

لاہور (وائس آ ف ایشیاء) پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم کا کہنا ہے کہ پاکستانی ٹیم میں اتحاد ڈریسنگ روم سے شروع ہوتا ہے۔ میں کوشش کرتا ہوں کہ ٹیم کے بہترین 15 کھلاڑیوں کو اعتماد دوں، پھر بہتر 11 کھلاڑیوں کو اعتماد دے کر ان سے گراؤنڈ میں کارکردگی لینے کی کوشش کرتا ہوں۔ ٹیم متحد ہوکر کھیل رہی ہے اور ہر کھلاڑی موقع ملنے پر 100 فیصد کارکردگی دکھا رہاہے۔موجودہ ٹیم نے مثبت کرکٹ کھیلی ہے اگر 350 کا ہدف بھی ملا تو ہم نے وہ بھی پورا کیا، کئی بار ہدف کا دفاع بھی کیا، ہماری پلاننگ اور محنت کے اثرات نتائج میں دکھائی دے رہے ہیں، کرکٹ میں اونچ نیچ ہوتی رہتی ہے۔ ویسٹ انڈیز کے خلاف ون ڈے سیریز جیتنے کے بعد انہوں نے کہا کہ کئی بار پلان کے مطابق معاملات آگے نہیں بڑھتے لیکن کوشش کرتے ہیں کہ گراؤنڈ میں 100 فیصد کارکر دگی دیں۔کپتان کی حیثیت سے میری کوشش ہوتی ہے کہ ٹیم بھرپور کوشش کرے۔بابر اعظم نے کہا کہ کوشش کررہے ہیں اور ٹیم تینوں شعبوں میں کارکردگی دکھا رہی ہے۔ پہلے میچ میں میری اور امام الحق کی اننگز کی وجہ سے پاکستان میچ 5 وکٹ سے جیت گیا۔ دوسرے میچ میں محمد نواز کی بولنگ نے میچ پلٹ دیا۔ تیسرے میچ میں شاداب خان نے پہلے بیٹنگ اور پھر بولنگ میں زبردست کارکردگی دکھائی۔انہوں نے کہا کہ ٹیم کا ہر کھلاڑی چاہتا ہے کہ انہیں پراپر چانس دیا جائے اور کارکردگی لی جائے اور بہتر انداز میں استعمال کیا جائے۔ ہماری ٹیم ایک یونٹ کے طور پر آگے بڑھ رہی ہے۔ ٹیم سپرٹ کی وجہ سے نتائج سب کے سامنے ہیں۔ گراونڈ کے باہر بھی کوشش کرتے ہیں کہ سب جڑ کر رہیں۔ یہی راز ہے کہ ہم مسلسل جیت رہے ہیں اور کارکردگی اچھی جارہی ہے۔ بابر اعظم نے کہا کہ بنچ پر بیٹھے ہوئے لڑکے جب کارکر دگی دیتے ہیں تو ہمیں پتہ ہوتا کہ یہ آگے کے لئے تیار ہیں۔ بینچ پر افتخار احمد، عبداﷲ شفیق، شاہ نواز دھانی اور زاہد محمود تھے، ہم نے شاہ نواز دھانی کو موقع دیا۔ شاہ نواز نے کارکردگی دکھائی اور کپتان کی حیثیت سے مجھے بھی اطمینان ملا ہے۔

image_pdfimage_print
شیئرکریں