Voice of Asia News

جرمنی کے یوکرین کو مہیاکردہ اسلحہ اور گولہ بارود کی فہرست کا پہلی بار انکشاف

برلن (وائس آ ف ایشیاء) جرمن حکومت نے پہلی مرتبہ یوکرین کو روس کے حملے کے خلاف دفاع میں مدد دینے کے لیے مہیا کردہ ہتھیاروں کی فہرست شائع کی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق جرمنی نے یوکرین کو مہلک ہتھیاروں کے علاوہ غیر مہلک فوجی مدد اور خدمات مہیا کی ہیں جن میں 3000 پینزرفاسٹ 3 کارتوس کے علاوہ 900 گرفت،14,900 ٹینک شکن بارودی سرنگیں،500 سٹنگرطیارہ شکن میزائل،2,700 اسٹریلا اڑتی مٹھی،ہینڈ گن گولہ بارود کے ایک کروڑ60 لاکھ رانڈ،50 بنکرمٹھی،500 اضافی بیرل اور بولٹ کے ساتھ 100 ایم جی 3 مشین گنیں،ایک لاکھ دستی بم،5300 دھماکاخیزہتھیار،100,000 میٹرڈیٹونیٹنگ کورڈ اور 100,000 ڈیٹونیٹرز،350,000 ڈیٹونیٹرز،23,000 جنگی ہیلمٹ،کپڑوں کے 15 پیلٹ،178 موٹر گاڑیاں،100 خیمے،12 پاورجنریٹر،دھماکا خیز آرڈیننس ڈسپوزل کے لیے مواد کے 6 پیلٹ،125 دوربین،1,200 اسپتال بستر،طبی سامان کے 18 پیلٹ، 60 سرجیکل لائٹس،حفاظتی لباس، سرجیکل ماسک،10,000 سونے کے بیگ،600 شوٹنگ شیشے،ایک عدد ریڈیو فریکوئنسی نظامفیلڈ کورڈ اور لے جانے کے آلات کی 5000 ریلز کے ساتھ 3000 فیلڈ ٹیلی فون،ایک فیلڈ اسپتال (اسٹونیا کے ساتھ مشترکہ منصوبہ،353 نائٹ ویژن گاگلز4 الیکٹرانک اینٹی ڈرون آلات اوردیگر سامان شامل ہے،یوکرینی وزیردفاع اولیکسی ریزنیکوف کے مطابق ملک نے بالآخر جدید جرمن توپخانے کا نظام پنزرہابیٹز 2000 نصب کردیا ۔ روس کے 24 فروری کو یوکرین پر حملہ کے آغازکے بعد سے امریکا اور اس کے یورپی اتحادیوں نے کیف کو لاکھوں ڈالر مالیت کے ہتھیاروں کے نظام اور فوجی سازوسامان مہیا کیے ہیں۔ان میں ڈرون، بھاری توپ خانہ، طیارہ شکن اورٹینک شکن میزائل شامل ہیں

image_pdfimage_print
شیئرکریں